اسلام آباد: معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ تنقید کرنے والے پہلے حقائق جانیں اور پھر بولیں۔اپنی ٹوئٹ میں فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ کورونا کے خلاف لائن آف ڈیوٹی پر مامور کسی سرکاری ملازم یا ڈاکٹر کی قیمتی جان کا خدانخواستہ ضیاع ہوتا ہے تو پنجاب حکومت نے انہیں شہداء پیکج دینے کا اعلان کیا ہے۔ گریڈ ایک سے 16 تک کے خاندانوں میں 40 لاکھ جب کہ گریڈ 17 سے اوپر 80 لاکھ کی امداد شاملِ ہے۔ بلا جواز تنقید کرنے والوں کی لاعلمی پر افسوس ہی کیا جا سکتا ہے۔ وزہراعظم عمران خان نے مستحق افراد، مزدوروں اور محنت کشوں کیلئے ملکی تاریخ کا سب سے بڑا پیکج دیا۔ پنجاب نے اگلے محاذ پر ڈٹے ڈاکٹروں نرسوں اور طبی عملے کو ایک ماہ کی اضافی تنخواہ دینے کا اعلان کیا ہے۔معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے ایک کروڑ 20 لاکھ غریب عوام کو 12000 روپے فی کس امداد دی۔ 144 ارب روپے غریبوں میں تقسیم کیے جا رہے ہیں۔ 9 اپریل سے لے کر اب تک ملک بھر کے تقریباً 41 لاکھ 40 ہزار خاندانوں میں 49 ارب 68 کروڑ 5 لاکھ روپے تقسیم کیے جاچکے ہیں۔ تنقید کرنے والے ” پہلے حقائق جانیں اور پھر بولیں”۔ یاست کے بجائے تمام صوبوں میں کورونا وائرس کو کنٹرول کرنا اصل مشن ہے۔ عمران خان کورونا اور بھوک دونوں کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں۔اس جنگ میں سب ان کا ساتھ دیں کیونکہ یہ وقت سیاست کا نہیں